Welcome to Kullayiman.com

السلا م و علیکم و یا علی مدد

امیر المؤمنین علی علیہ السّلام نے فرمایا: اے حارث! میری وجہ سے تین قسم کے افراد ھلاک ھوں گے: ایک وہ شخص جو میرے بارے میں غلو اور افراط کا شکار ھوا۔ دوسرا وہ شخص ھے جو میری شان و عظمت میں مقصّر ھے۔ تیسرا وہ شخص ھے جو مردود و پریشان ھے۔ وہ مجھے باقیوں پر مقدّم رکھے یا مؤخّر کرے۔ آپ نے فرمایا: اے حارث! تمھارے لئے اتنا ھی کافی ھے کہ تمھیں یہ معلوم ھو کہ میرے شیعوں میں سے سب سے افضل و بھتر وہ شخص ھے جو درمیانی راہ اختیار کرے اور ان کی طرف غالی بھی رجوع کریں اور دوسرے بھی ان کی اتّباع کریں۔ (بخوف طوالت حدیث کا صرف کچھ حصّہ یھاں بیان کیا گیا ھے۔ حدیث کے شروع کے اور آخری حوالہ کے لئے ملاحظہ کیجئے

( امالی شیخ مفید، اردو ترجمہ صفحہ نمبر 20)
منجانب : ادارہ اشاعت حق

He (Ali) said: Three people will go astray because of me. There are those who have gone to the extreme in their passionate love for me and commit "Ghuloo, غلو ", and those who lower my status and commit "Muqasriyat, مقصریت", and those who waver in doubt, not knowing whether to proceed or recoil.""Suffice it for you, Oh brother (from) Hamadan! Be it known that my best followers are the people united on the middle path. To them should the extremists return, and with them should the hesitants join."

( Amali Sheikh Mufeed , p20 translation urdu )